سالگرہ دن شاعری
0 1 min 5 mths
خلوص کا اظہار کیجئے

سالگرہ دن شاعری
سالگرہ دن شاعری کی پوسٹ میں آج بہت ہی پیاری سی شاعری پیش خدمت ہے. شاعری سے آپ اپنے پیاروں کے سالگرہ کا دن مہکا سکتے ہیں. انھیں سالگرہ کے دن یہ شاعری بھیج کر اپنے نیک اور دلکش جذبات کا اظہار کرنے کے لئے اور انکا دن بنانے کے لئے آپ کو ہماری یہ کاوش پسند آئے گی .

خوشیوں بھرا ہر سال تمہارا ہو
خوشیوں بھرا ہر سال تمہارا ہو
یہ آج یہ کل تمہارا ہو

سالگرہ مبارک خوشیوں بھرا ہر سال تمہارا
خوشیوں بھرا ہر سال تمہارا

کریں جو چاند ستارے گفتگو
تو باتوں میں بھی انکی ذکر ہر پل تمہارا ہو

ہے دعا تم جیو ہزاروں سال
یہ ساتھ میرا ہر مشکل میں تمہارا ہو

رنگوں کو سلجھا کے خوشیوں کو راستہ دیا
کیا خوب آپ نے سالگرہ دن سجا دیا
کیک بھی میٹھا شمع بھی روشن مگر
مزہ دوبالا ہوا جب آپ نے مسکرا دیا

کچھ خوشیاں کچھ آنسو دے کر ٹال گیا
جیون کا اک اور سنہرا سال گیا

برسوں پہلے خوابوں کے جزیرے پر
اک رات کی رانی کو دیکھا
اسی پہر تیری آہٹ کو میں نے سنا
پهر یوں ہوا کہ پرستان سے وہ پری میری گود میں آگری
چار ستمبر ٢٠٢١ میں اک گڑیا رانی کی ماں بن گئی

سالگرہ مبارک ہو دوست تم کو
اللہ دے لمبی زندگی دوست تم کو

سالگرہ مبارک ہو دوست تم کو
سالگرہ مبارک ہو دوست تم کو

سدا ہنستی مسکراتی اور کھلکھلاتی رہو
صرف خوشیاں ہی ملیں زندگی میں تم کو

خلوص ملے ایسے دوستوں سےآپ کو
واسطہ پڑتا ہی رہے زندگی میں تمہارا

آج کے دن اُترا تھا روشن ستارا
کِیا تُو نے جگمگ، یہ آنگن ہمارا
لوٹائیں ہیں تُو نے، ہمیں کھوئی خوشیاں
بنا گھر میں سب کا، تُو نین تارا
ہو زندگی میں برکت، سدا تیری حاتم
مبارک ہو تم کو، جنم دن تمھارا

ممّی پاپا کو تُو نے ہے جینا سکھایا
پڑدادی کو سونے کی سیڑھی چڑھایا
دادا کی آنکھوں کی ٹھنڈک بنا تُو
اک پل نہیں دادی کا، تجھ بن گزارا
ہو زندگی میں برکت، سدا تیری حاتم

مبارک ہو تم کو، جنم دن تمھارا

پُھپھو کہے تجھ کو ہیرا و سونا
ہے چاچُو کا اپنے تُو ننھّا کھِلونا
ماموں و خالہ کا مان ہے ہو
تم
نانی کی بھی تجھ میں، جان ہے ہو
تم
تُوہے سبھی کا راج دُلارا

پُھپھو کہے تجھ کو ہیرا و سونا

ہو زندگی میں برکت، سدا تیری پیارے
مبارک ہو تم کو، جنم دن تمھارا
رحمتیں میرے ربّ کی، سدا تجھ پہ برسیں
خود خوشیاں تجھ سے، مِلنے کو ترسیں
خُدا منور کرے، تیرے ذہن و قلب کو
ہو کاملِ ایماں پیکر تمھارا
ہو زندگی میں برکت، سدا تیری پیارے
مبارک ہو تم کو، جنم دن تمھارا

Salgirah Mubarak – Ho Zindagi Main Barkat Sada Tumhari – Salgirah Mubarak In Urdu/Hindi

میری زندگی میرے جان جاں
تمہیں سالگراہ مبارک ہو
خدا رکھے تمہیں سدا شادماں
تمہیں سالگرہ مبارک ہو
میری سانس سانس کرے دعا
جو کرو دعا رب کرے عطا
غموں سے تم کو رہے اماں
تمہیں سالگرہ مبارک ہو
سرخرو رہو زندگی میں ہر قدم
بھولے سے بھی نہ ہو آنکھیں تمہاری نم
خدا وہ بھی کرے عطا جس کا نہ ہو گماں
میری زندگی میرے جان جاں
تمہیں سالگراہ مبارک ہو

ایک برس اور بیت گیا
کب تک خاک اڑانی ہے

گھرا ہوا ہوں جنم دن سے اس تعاقب میں

زمین آگے ہے اور آسماں مرے پیچھے

بہت دورہوں تم سے
پردل تمہارے پاس ہے
جسم ہے پرتگال میں
پرروح تمہارے پاس ہے
سالگرہ توہے وہاں تمہاری
پرجشن ہمارے پاس ہے
جداہیں ایک دوسرے سےہم
پھربھی تم ہمارے پاس ہو
اورہم تمہارے پاس ہیں

سب سے پیارا لگتا ہے مجھے یہ خاص دِن
جسے گذارنا نہیں چاہتی میں آپکے بِن
ویسے تو دل دیتا ہے سدا دعا آپ کو
یاد بھی رکھتی ہوں ہر پوجا میں آپ کو
پھر بھی کہہ رہی ہے دل سے شاکرہ آپ کو

ہومبارک سالگرہ کا خوشیوں بھرا دن آپ کو

ہر سال ہی آتا ہے یہ اِک خوشگوار دن
دعا ہے یہ ہم سب کی کہ آتا رہے سدا

آتی دل سےصدا ہے یہ میری
خوش رہو میاں دعا ہے یہ میری
پھیلی ہے خوش بو چار سو تجھ سے
سج رہی ہے یہ کہکشاں تجھ سے
انجمن بھی سجی ہے یہ تجھ سے
جان تجھ پر فدا ہے یہ میری
آتی دل سےصدا ہے یہ میری
خوش رہو میاں دعا ہے یہ میری
دور غم تیری زندگی سے ہو
شمع روشن علم کی تجھ سے ہو
پاش یہ کوہسار تجھ سے ہو
پیار تیرا ادا ہے یہ میری
آتی دل سےصدا ہے یہ میری
خوش رہو میاں دعا ہے یہ میری

یہ تو اک رسم جہاں ہے جو ادا ہوتی ہے
ورنہ سورج کی کہاں سالگرہ ہوتی ہے
خزاں کی رت ہے جنم دن ہے اور دھواں اور پھول
ہوا بکھیر گئی موم بتیاں اور پھول

حسین چہرے کی تابندگی مبارک ہو
تجھے یہ سالگرہ کی خوشی مبارک ہو

جلتی شمعیں ، روشن چہرے
کامنی لڑیاں ، نازک سہرے
نرگس ، بیلا، موتیا، لالہ
جوہی ، چمپا اور بنفشہ
ہر کوئی شاد ہے ناں
آج تمہاری سالگرہ ہے
دیکھو ہم کو یاد ہے ناں
ہم تو صرف دعا گو لوگ
خاک و مہر کا کیا سنجوگ
پاس رہیں یا دور رہیں
محفل تو آباد ہے ناں
آج تمہاری سالگرہ ہے
دیکھو ہم کو یاد ہے ناں


سالگرہ دن شاعری

گل معنیء سخن کیلئے
خار چاہئیے
گلزار جیسا اک نہیں
ہزار چاہئیے
چلتا ہے دھڑکنوں پہ خرامِ قلم سے وہ
لکھتا ہے موسموں پہ
محبت کے حرفِ نو
اس جیسا دوسرا نہیں
اقرار چاہئیے
گلزار جیسا اک نہیں
ہزار چاہئیے
ملتی ہے جیسے
سب کو
سورج سے زندگی
اُس پار کے چراغ کی
اس پار روشنی
اس کائناتی پیار کا اظہار چاہئیے
گلزار جیسا اک نہیں
ہزار چاہئیے
شب اوڑھ لے تو
چاند کی کرنیں نثار ہوں
تیشہ اٹھائےدن کا
تو
نین آبشار ہوں
اس شاہِ شاعراں کا دیدار چاہئیے
گلزار جیسا اک نہیں
ہزار چاہئیے

بشریٰ حزیںؔ

جُگ جُگ جیو میرے دل کی رانی
ہے میرے سانسوں کی تو روانی
تجھ سے درخشاں چمن ہمارا
روشن ہے یہ گھر سارے کا سارا
ہو تیرے دم سے ہر سو اُجالا
ہو دور تجھ سے غم کی کہانی
جُگ جُگ جیو میرے دل کی رانی
ہے میرے سانسوں کی تو روانی
ہوں چاند تارے ماتھے کا جھومر
ہو کہکشاں بھی قدموں کا زیور
دنیا میں ہو سچائی کی رہبر
تجھ سے ہے یہ میری زندگانی
جُگ جُگ جیو میرے دل کی رانی
ہے میرے سانسوں کی تو روان

سنو میری پیاری ، میری اچھی دوست
بیٹی تو ماں باپ کا فخر اور مان ہوتی ہے
روشنیوں کو ساتھ لے کر زمین پر اترتی ہے
تم وہ فخر لے کر آج کے دن اتری تھیں
تم نے روشنیوں سے پورے گھر کو اجال دیا تھا
دیکھو اُس دن سے آج تک ۔۔۔
تمہاری روح کا اجالا ہر طرف پھیل رہا ہے
میری اچھی دوست
میری پیاری دوست
آج وہی اجلا روپہلا سا دن ہے
ہاں تمہاری سالگرہ کا دن ہے
دوستو! آؤ مل کر ہم سب مناتے ہیں
دوست کو سالگرہ مبارک کہتے ہیں
ڈھیروں دعائیں اسے دیتے ہیں
خوش رہنے کی صحت سلامتی کی
سکھ چین کی، سب نام کرتے ہیں
پیاری دوست ہماری جئے کئی سوسال
ہاتھ اٹھا کر خدا سے یہ دعا مانگتے ہیں

مبارک تجھے تیری سالگرہ ہو
آنے والا ہر سال خوشیوں سے بھرا ہو
تیرے ارد گرد بہاروں کا رقص ہو
آئینہ تیری خوبصورتی کا عکس ہو
منزلیں خود تیرے قدموں میں‌ آئیں
تجھے کبھی کوئی نہ مصیبت ملے
سب لوگ تیرے گُن گانے لگیں
تُو گھر سب کے دلوں میں بنانے لگے
بلندیاں تیرے قدم چومیں
مسرتیں ‌تیرے چار سُو گھومیں
تیری پوری ہر کوئی خواہش ہو
جنت تیری اگلی رہائش ہو
مبارک تجھے تیری سالگرہ ہو
آنے والا ہر سال خوشیوں‌ سے بھرا ہو

یہ بے خودی یہ لبوں کی ہنسی مبارک ہو
تمہیں یہ سالگرہ کی خوشی مبارک ہو
کبھی نہ آئے کوئی غم قریب تمہارے
جہاں میں سب سے اچھے ہوں نصیب تمہارے
خلوص، پیار بھری دوستی مبارک ہو
تمہیں یہ سالگرہ کی خوشی مبارک ہو

تمھاری سالگرہ پہ یہ دُعا ہے میری
کہ ایسا روزِ مبارک ہزار بار آئے۔
تمھاری ہنستی ہوئی زندگی کی راہوں میں
ہزاروں پُھول لٹاتی ہوئی بہار آئے

جو خوشی تمہارے قریب ہو
وہ سدا تمہیں نصیب ہو
تجھے وہ خلوص ملے کہ
جو تیری زندگی پہ محیط ہو
جو خیال دل میں اسیر ہو
اور دعا میں بھی تاثیر ہو
تجھے وہ جہان ملے
جدھر غموں کا نہ گزر ہو
جدھر روشنی ہو خلوص کی
اور نفرتوں کو خبر نہ ہو

زندگی بھر یہ آسماں تجھ کو
کسی آفت میں‌مُبتلا نہ کرے
یہ بہاریں‌ جہاں جہاں جائیں
کوئی تجھ کو ان سے جدا نہ کرے
تیری زندگی کی روشنی کو خُدا
کسی ظلمت سے آشنا نہ کرے

آج کے روز تری نظر کروں‌کیا جاناں؟
جان تو پہلے ہی ترے نام لگا رکھی ہے
اے مری صبح کے تارے تری خاطر میں نے
اپنی ہر سانس کے ہونٹوں پہ دُعا رکھی ہے

ضروری گزارش
تازہ تازہ سالگرہ مبارک کی پوسٹ کے ہمارے فیس بک پیج کولائک اور فالو کریں

مزید سالگرانہ پوسٹ کے لئے ہماری پوسٹ پڑھیے – والدین کو سالگرہ مبارک کے پیغامات اور نیک خواہشات


خلوص کا اظہار کیجئے

Leave a Reply